urdu timepass ghazal poetry by Ateeb
  • Save

غزل کا پس منظر:

کہا جاتا ہے کہ “جس گھر کے مرد بے غیرت ہو جائیں اس گھر کی عورتیں بے حیا ہو جاتی ہیں”۔ میرا ذاتی خیال ہے کہ اگر اس فقرے میں گھر کی جگہ معاشرے کا لفظ استعمال کر لیا جائے تو شائد یہاں کے پڑھے لکھے جاہلوں کی سمجھ میں کچھ بات آجائے۔ جہاں انسان پیدا ہوتا ہے اور جس معاشرے، گلی، محلے، گائوں ، ملک میں وہ جنم لیتا ہے، وہ بھی اسکے گھر کی مانند ہی ہوتا ہے ، اس کی عزت بھی ہمارے ذاتی گھر کی عزت کی مانند ہی ہوتی ہے۔

کسی نے سچ ہی کہا ہے کہ جب کچھ مخصوص الفاظ بار بار تکرار کے ساتھ دہرائے جائیں تو اپنا اثر کھو بیٹھتے ہیں۔ کچھ یہی حال ہمارے یہاں موجود مغربی ثقافت کے علمبرداروں کا بھی ہے۔ انکے لئے بھی ‘ بے غیرت’ کا لفظ اتنی بار استعمال ہو چکا ہے کہ اب یہ لفظ اپنی معنویت کا اثر کھو چکا ہے۔

معلوم ہوتا ہے کہ میں جذبات کے دھارے کے ساتھ شائد کچھ زیادہ ہی آگے نکل گیا ہوں لیکن سامنے کی چیزوں کا کیا کروں؟ اور اس دل میں اٹھتے ظوفان کو کیسے سنبھالوں؟ ‘ٹائم پاس’ اور ‘گرل فرینڈ’ ، بوائے فرینڈ’ کلچر ہماری ثقافت کو دیمک کی طرح چاٹ رہا ہے۔اسی مغربی تہذیب کی اندھا دھند تقلید میں نہ ہم ہنس بن سکے نہ کوے، ہماری حالت بِن پونچھ کے بندر جیسی ہے۔ لیکن اس سب کے باوجود بس یہی سوچ دل کو تسلی دیے رکھتی ہے کہ اس ملک کی تہذیب و ثقافت کا بوجھ اٹھانے کیلئے کچھ دردِ دل رکھنے والے لوگ ہمیشہ زندہ رہیں گے۔

غزل:

ہم نے ٹائم پاس بنائے رکھا ہے
وہ سمجھے ہیں دِل میں بسائے رکھا ہے

اسکا میرا، رنگ و ہوس کا رشتہ ہے
دنیا کو لیکن عشق بتائے رکھا ہے

اپنی ساری رِیت رواجوں سے ہٹ کر
ثقافت کی دھجیوں کو اڑائے رکھا ہے

مغرب کی تقلید میں اندھا دھند ہو کر
بے باکی کا ماحول بنائے رکھا ہے

انگریزی، انگریزی کا کر کے پرچار
قوم کو ہم نے الو بنائے رکھا ہے

جلتے دیے کی لو کو جھوٹ کی آندھی سے
سچوں نے بجھنے سے بچائے رکھا ہے

درد سے خالی لوگوں میں ہم جیسوں نے
کتنا دل کا درد جگائے رکھا ہے

از محمد اطیب اسلم

غزل کا پانچواں شعر اُن نام نہاد علم کے تقسیم کاروں کے نام ہے جو دن رات ڈیجیٹل میڈیا کے ذریعے بے غیرتی اور بے حیائی کو فروغ دے رہے ہیں۔قرآنِ پاک میں ارشادِ باری تعالیٰ ہے:

“جو لوگ چاہتے ہیں کہ مسلمانوں میں بے حیائی پھیلے ان کے لیے دنیا اور آخرت میں دردناک عذاب ہے”. [سورہ نور آیت 19 ، پارہ 18 ]

Latest posts by Muhammad Ateeb Aslam (see all)

2 تبصرے “غزل: ہم نے ٹائم پاس بنائے رکھا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں